نڈر اور پُراعتماد لڑکی ہوں، کویتا کوشک

چندر مُکھی کا کردار کویتا کوشک کی مقبولیت میں اضافہ ہی کرتا چلا گیا۔
یہ ’’سب‘‘ ٹی وی چینل کے مشہور پروگرام ’’ایف آئی آر‘‘ کی ایک پولیس افسر کا کردار تھا۔ اس کیریکٹر کی بدولت اداکارہ نے ناظرین کا جیتا اور ناقدین کو اپنی طرف متوجہ کیا۔ اداکارہ کا شمار ان فن کاروں میں ہوتا ہے جنھیں ورسٹائل کہا جاتا ہے۔ باصلاحیت کویتا نے ٹیلی ویژن پر پروگرام ہوسٹ کرنے کا تجربہ بھی کیا اور ڈانس پرفارمینس بھی دی۔ اس کی پرفارمینس سے متاثر ہو کر بڑے پردے کے کرتا دھرتاؤں نے اسے سنیما پر چانس دیا، لیکن یہ سلسلہ طول نہ پکڑ سکا۔ بالاجی کے شو کتمب سے بہ طور اداکارہ اپنے کیریر کا آغاز کرنے والی اس اداکارہ کے کیریر اور نجی زندگی کے بارے میں یہ مضمون آپ کی دل چسپی کا باعث بنے گا۔
کویتا کوشک پُر اعتماد اور ڈٹ کر مقابلہ کرنے والی لڑکی ہے۔ پہلی مرتبہ اسے مونیکا ملہوترا کے روپ میں اسکرین پر نظر آنے کا موقع ملا اور اس کردار کے طفیل وہ ٹی وی کی مقبول سیریل ’’کہانی گھرگھر کی‘‘ میں ’’منیاتا‘‘ کا رول حاصل کرنے میں کام یاب ہوئی۔ یہ کیریکٹر اس کے پرستاروں کی تعداد میں اضافہ کرنے کا باعث بنا۔ اب ناقدین اور ٹیلی ویژن کے کرتا دھرتاؤں کی نظر اس پر تھی۔ اسے ڈراموں میں کردار آفر ہونے لگے اور ایک وقت ایسا آیا کہ اس کے لیے انتخاب کرنا مشکل ہو گیا۔ تاہم خوش قسمتی سے کویتا نے تمام جان دار کردار ہی قبول کیے۔
وہ اپنے بارے میں بتاتی ہے،’’ میرا تعلق دہلی سے ہے اور تاریخ پیدائش 15 فروری 1981ہے۔ میں دہلی میں ہی تھی جب مجھے کتمب میں رول آفر ہوا اور پھر مجھے ممبئی آنا پڑا۔‘‘ اداکارہ کے والد ہندوستان میں محکمۂ پولیس کے عہدے دار ہیں جب کہ والدہ ہاؤس وائف ہیں۔ وہ اپنے والدین کی واحد اولاد ہے اور یہی وجہ ہے کہ ان کی لاڈلی ہے۔ شاید اسی لیے وہ اس کی ہر خواہش کے سامنے بے بس ہو جاتے ہیں۔ کویتا کا کہنا ہے،’’ ہندوستان کے بے شمار گھرانوں میں آج بھی شوبزنس سے لڑکیوں کا وابستہ ہونا اچھا خیال نہیں کیا جاتا، لیکن میں خوش قسمت ہوں کہ میرے والدین نے ان باتوں کو کوئی اہمیت نہیں دی۔ میرے والد کا کہنا ہے کہ لڑکیوں کو اپنی فیملی کے لیے کارآمد بننا چاہیے اور شوبزنس میں اگر وہ اخلاقیات کا خیال رکھ کر آگے بڑھنا چاہیں تو اس میں کوئی برائی نہیں۔ میں نے ان سے ٹیلی ویژن پر کام کرنے کی خواہش کا اظہار کیا اور انھوں نے انکار نہیں کیا۔‘‘ اس کا کہنا تھا کہ آزادی اور بے باکی دو مختلف باتیں ہیں اور وہ ان میں تمیز کرسکتی ہے۔ یہی وجہ ہے آج بھی اس کا دامن اسکینڈلز سے خالی ہے۔
2004 کی ایک سیریل ’’دل کیا چاہتا ہے‘‘ میں اسے نٹ کھٹ اور چلبلی لڑکی کا کیریکٹر سونپا گیا جسے اداکارہ نے کمال خوبی سے ادا کیا۔ یہ کیریکٹر اس کے کیریر میں شان دار اضافہ ثابت ہوا اور ٹی وی کے بعد بڑی اسکرین سے اس کا بلاوا آیا جو اس کی زبردست کام یابی تھی۔ ان دنوں کویتا کوشک اسکرین سے دور ہے، جس کی وجہ اس کی نجی مصروفیات ہیں۔
کویتا کوشک کا ناظرین سے بہ طور ڈانسر تعارف ’’نچ بلیے‘‘ کے ذریعے ہوا۔ 2005 کے اس ریالٹی شو نے ہندوستان بھر میں کروڑوں ناظرین کی توجہ حاصل کی۔ کویتا اس میں اپنے پارٹنر کے ساتھ شریک ہوئی اور ڈانس پرفارمینس دی جسے ناظرین نے پسند کیا۔ 2007 میں اسے ڈراما ’’کیسر‘‘ میں دیکھا گیا، لیکن یہ ڈراما ناکام ثابت ہوا اور اس کا کردار ناظرین کی توجہ حاصل نہیں کر سکا۔ اس کے بعد وہ مقبولیت کا ریکارڈ قائم کرنے والے ڈرامے کُم کُم کی ’’نیناں‘‘ بن کر سامنے آئی اور کمال پرفارمینس دی۔ اداکارہ کے مطابق وہ اس کردار میں زیادہ گنجائش محسوس کرتی تھی اور اس روپ میں اسے بہت مزہ آیا۔
اسے ’’زی اسپورٹس‘‘ اور ’’گرم مسالا‘‘ جیسے شوز کی میزبانی کا موقع ملا جب کہ 2009 میں ’’ارے دیوانو مجھے پہچانو‘‘ میں اسے پھر ہوسٹ بننے کا تجربہ ہوا اور مزاح سے بھرپور یہ ریالٹی شو کویتا کے برجستہ جملوں اور حسِّ مزاح کی وجہ سے ’ہٹ‘ گیا۔ اداکارہ کا یہ پہلا مزاحیہ شو تھا اور وہ اسے شان دار تجربہ قرار دیتی ہے۔ کویتا کوشک کی نظر میں میزبان کی کام یابی اس کی مُسکراہٹ اور نرم گفتاری میں پوشیدہ ہوتی ہے اور کوئی بھی میزبان اس کا استعمال کر کے اپنے پروگرام کو چار چاند لگا سکتا ہے۔ 2010 کا ’’کامیڈی سرکس کا جادو‘‘ ناظرین کو ابھی نہیں بھولا ہو گا۔ یہ باصلاحیت فن کارہ اس میں کپل شرما کے ساتھ مزاحیہ پرفارمینس دیتی نظر آئی تھی۔ اور پھر 2011 میں وہ مقبول ترین جاسوسی ڈرامے ’’سی آئی ڈی‘‘ کی سب انسپکٹر ’’انوشکا‘‘ بن گئی۔ یہ ڈراما طویل عرصے سے ہر عمر کے ناظرین کی توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے اور اس میں کردار نبھاتے ہوئے کویتا کو اپنے پہلے سیریل کی یاد آتی رہی۔ جی ہاں! وہ پہلی مرتبہ اسی روپ میں اسکرین پر نظر آئی تھی۔ اداکارہ کا کہنا ہے کہ اسے یہ کردار نبھا کر زیادہ خوشی نہیں ہوئی۔ اگرچہ وہ اسے ایک اہم کیریکٹر مانتی ہے، لیکن اس کا خیال ہے کہ ایسے کردار دہرائے جانے سے ان کا لطف جاتا رہتا ہے۔
آئیے، اداکارہ کی پسند اور ناپسند سے آپ کو آگاہ کرتے ہیں۔ فیشن سے بات کا آغاز کرتے ہوئے اس نے بتایا،’’میرے نزدیک فیشن بدلتی ہوئی دنیا کے رنگ ڈھنگ اپنانے کا نام ہے۔ جہاں تک لباس کی بات ہے تو میں وہی پہناوا پسند کرتی ہوں جو ’’اِن‘‘ ہونے کے ساتھ ساتھ آرام دہ ہو۔‘‘ شاپنگ کرنا اس کا پسندیدہ کام ہے۔ اداکارہ میک اپ اور جیولری کا سہارا بہت کم موقعوں پر لیتی ہے۔ اُسے عام لڑکیوں کی طرح سجنے سنورنے کا شوق نہیں۔ اورنج کلر اس کا پسندیدہ ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ میرے وارڈروب میں زیادہ تر گہرے رنگوں کے ملبوسات ہیں جو میرے مزاج اور شوخ طبیعت کا اظہارکرتے ہیں۔ اس کا کہنا ہے،’’ اچھا پکوان میری کم زوری ہے، لیکن میں صرف بنے بنائے کھانوں پر ہاتھ نہیں صاف کرتی بلکہ کچن میں جاکر ڈشز تیار بھی کرتی ہوں۔ میرے ہاتھ کے کھانوں کی سبھی تعریف کرتے ہیں۔‘‘
اداکارہ کی زندگی میں ہنگاموں اور شوخیوں کا خوب رنگ نظر آتا ہے۔ مختلف اسپورٹس، ٹی وی پر اس کی توجہ حاصل کرتے ہیں جب کہ کرکٹ کی کھلاڑی ہے۔ یہ اس کا پسندیدہ کھیل ہے اور کالج کے زمانے میں گرلز کرکٹ ٹیم کا حصّہ رہی ہے۔ شاعری سے پڑھنے کی حد تک لگاؤ رکھتی ہے۔ مرزا غالب کی شاعری کی دیوانی ہے جب کہ بشیربدر اور احمدفراز اس کے پسندیدہ شعرا میں شامل ہیں۔
اداکارہ کے نزدیک دوستی ایک انمول جذبہ ہے۔ وہ بتاتی ہے،’’ جیسے جیسے میں نے عمر کے مدارج طے کیے میرے حلقۂ احباب میں اضافہ ہوتا چلا گیا۔ یہ ایک فطری بات ہے۔ ہم تعلقات تشکیل دیتے ہیں، لیکن ہر فرد کو دل میں جگہ نہیں دے پاتے۔ میں دوستوں کے معاملے میں بہت حساس واقع ہوئی ہوں۔ وہ تمام لڑکیاں جو میرے بچپن میں میرے ساتھ تھیں، آج بھی ان سے رابطے میں ہوں اور وہ میری زندگی میں اہمیت رکھتی ہیں۔ کالج لائف میں لڑکوں سے بھی واسطہ پڑا۔ ان میں صرف دو ہی افراد میرے بہترین دوست ثابت ہوئے۔‘‘
ٹیلی نگری میں اپنے مستقبل کی بابت اداکارہ نے کہا کہ وہ اس انڈسٹری سے جڑ کر رہنا چاہتی ہے، لیکن قبل از وقت کچھ نہیں کہہ سکتی۔ اس کا کہنا ہے، ’’کل کیا ہو گا مجھے نہیں معلوم، لیکن خواہش مند ہوں کہ اس نگری سے وابستگی برقرار رہے۔‘‘
About these ads

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s