لڑکے نے قیدی کی جان لے کر باپ کا بدلہ لیا

تصویربارہ سالہ لڑکے نے پیشی پر آئے قیدی کی جان لے لی۔۔ گوہر کہتا ہے اس نے باپ کو معذور بنانے کا بدلہ لیا۔۔ اور بھارتی فلم سرکار دیکھ کر قتل کا منصوبہ بنایا۔۔ 

 خون کا بدلہ خون ۔۔ جان کا بدلہ جان ۔۔ بندوق میرا قانون ۔۔ اور ایسے ہی کئی فلمی مکالمے بچوں کے ذہنوں پر کس طرح اثر انداز ہوتے ہیں یہ سلاخوں کے پیچھے موجود گوہر کو دیکھ کر پتہ چلتا ہے۔ 
 
ایک برس پہلے گوہر کے باپ نواز اور غیاث کا جائیداد پر جھگڑا ہوا۔۔ غیاث نے بندوق میرا قانون پر عمل کرتے ہوئے نواز کو گولیوں کا نشانہ بنایا اور اس کی دونوں ٹانگیں ضائع ہوگئیں۔۔ تب سے گوہر بدلے کی آگ میں جلنے لگا۔

غیاث ایک اور کیس میں پیشی کے لئے پولیس حراست میں گوجرانوالہ کی عدالت پہنچا تو آٹھویں جماعت کا گوہر بھی اس کا انتظار کررہا تھا۔۔ وہ اپنے بستے میں پستول چھپاکر لایا تھا۔۔ نواز کو دیکھتے ہی خون نے جوش مارا اور گوہر نے گولیاں برسادیں۔۔ جس سے غیاث اور ارشد شدید زخمی ہوگئے۔۔

اسپتال پہنچ کر غیاث دم توڑ گیا۔۔ پولیس نے گوہر کو موقع سے گرفتار کرلیا۔۔ لیکن اسے اپنے کیے پر کوئی پشیمانی نہیں۔۔ سلاخوں کے پیچھے بھی وہ بے فکری سے ہنس رہا ہے۔۔ سزا کا ڈر ہے نہ گھر والوں کی فکر۔

گوہر کا کہنا ہے اس نے پستول اپنے کسی دوست سے حاصل کیا۔۔ لیکن پولیس کو اس کا نام نہیں بتایا۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s