مصر: مرسی کے حامیوں کیخلاف فورسز کی کارروائیاں، مزید 173 جاں بحق

تصویر

مصرمیں معزول صدر محمد مرسی کے حامیوں کے خلاف سیکیورٹی فورسز کی کارروائیاں جاری ہیں، گزشتہ 24گھنٹوں میں مارے گئے افراد کی تعداد 173 ہوگئی جبکہ محمد مرسی کی حمایت کے الزام میں ایمن الظواہری کے بھائی کو بھی گرفتار کرلیا گیاہے۔ غیرملکی خبرایجنسی کے مطابق جمعے کو پرتشدد احتجاجی مظاہروں میں اخوان المسلمون کے اعلیٰ رہنما محمد بدیع کے بیٹے عمار کو سیکیورٹی فورسز کی جانب سے قتل کئے جانے کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ہفتے کو بھی قاہرہ کے کئی علاقوں میں احتجاجی مظاہروں پر فائرنگ کی گئی۔ قاہرہ اسکوائر اور الفتح مسجد کے نزدیک شدید فائرنگ ہوئی، کئی گھنٹوں کی فائرنگ اور جھڑپوں کے بعد پولیس نے معزول صدر مرسی کے درجنوں حامیوں کو گرفتار کرلیا ہے۔ مصری صدارتی ترجمان کا کہنا ہے کہ ملک کو انتہاء پسند قوتوں کے ہاتھوں جنگ کاسامنا ہے، مصر میں انتہاء پسندی اوردہشت گردی سے جارحیت کے ذریعے نمٹا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مصر میں حکومت طے شدہ روڈ میپ پرعمل درآمد کیلئے پرعزم ہے۔ دوسری جانب مصری حکومت نے اخوان المسلمون پر پابندی عائد کرنے پر غور شروع کردیا ہے جس سے صورتحال مزید خراب ہونے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ 
 
 
 

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s