مہران بیس پر حملہ کرنیوالوں میں جیو ٹی وی کا ملازم بھی شامل تھا، نیویارک ٹائمز کا دعویٰ

تصویر معروف صحافی حامد میر پر قاتلانہ حملے کے بعد انکشافات کا نہ رکنے والے سلسلہ جاری ہے۔ امریکی اخبار ٹائمز نے دعویٰ کیا ہے کہ مہران بیس پر حملہ کرنیوالوں میں شامل ایک حملہ آور جیو ٹی وی کا ملازم بھی تھا۔ اخبار نے انکشاف کیا ہے کہ مہران بیس پر حملہ کرنیوالا ایک شخص جیو ٹی وی کا ملازم تھا مہران بیس پر حملے کے بعد ایک حملہ آور کی شناخت جیو ٹی وی کے ملازم کی حیثیت سے ہوئی۔

اخبار نے دیگر واقعات کے بارے میں شکوک وشبہات کا اظہار کیا ہے نیو یارک ٹائمز کے مطابق صحافی ولی بابر کے قتل میں بھی جیو ٹی وی میں سے کسی نے قاتلوں کو ولی بابر کے بارے میں مخبری کی تھی اخبار کی رپورٹ کے مطابق جیو کے اینکر کے قتل کی سازش بھی تیار کی گئی جس میں جیو کا ایک جونئیر رپورٹر ملوث تھا جس نے منصوبہ بندی میں ملوث ہونے کا اعتراف بھی کیا۔ واضح رہے کہ متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے بھی حامد میر کے حوالے سے اٹھائے سوالات میں اس طرف اشارہ کیا تھا کہ جیو کے کن لوگوں کو حامد میر کے کراچی آمد اور فلائٹ کا علم تھا۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s