56 اسلامی ممالک کے باوجود نہتے فلسطینی عوام، مسلمانوں کو پکار رہے ہیں، سراج الحق

56 اسلامی ممالک کے باوجود نہتے فلسطینی عوام، مسلمانوں کو پکار رہے ہیں، سراج الحق جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ 56 اسلامی ممالک کے باوجود نہتے فلسطینی عوام، مسلمانوں کو پکار رہے ہیں، المیہ یہ ہے کہ امت کی قیادت بزدلوں اور کرگسوں کے ہاتھوں میں ہے، چند لاکھ یہودیوں نے قبلہ اول پر قبضہ کر کے فلسطینیوں کا خون بہایا ہے، اب وقت آگیا ہے کہ امت بیدار ہو سب سے زیادہ ذمہ داری سعودی عرب پر بنتی ہے کہ وہ عالم اسلام کی قیادت کرے۔ نواز شریف فوری طور پر اسلامی ممالک کا سربراہی اجلاس طلب کریں اور اسرائیلی مظالم کے خلاف آواز بلند کریں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی ضلع شرقی کے تحت جلسہ یکجہتی فلسطین و عوامی دعوت افطارسے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جلسے سے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعےم الرحمن ،امیرجماعت اسلامی ضلع شرقی یونس بارائی،سیکریٹری نعیم اختر اور دیگر نے خطاب کیا۔ جلسے سے حماس کے مرکزی رہنما ڈاکٹر خالد مشعل نے ٹیلی فونک خطاب کیا۔ قبل ازیں مظلوم فلسطینیوں پر اسرائیلی مظالم کے خلاف جوہر موڑ پر احتجاجی مظاہرہ بھی کیا گیا، جس میں مظاہرین نے اپنے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھارکھے تھے جن پر اسرائیلی مظالم کی مذمت اور نہتے فلسطینیوں سے یکجہتی کے نعرے درج تھے۔ اس موقع پر سراج الحق نے گلستان جوہر میں پروفیسر غفور احمد روڈ کا افتتاح بھی کیا۔

سراج الحق نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج ہم اس عظیم سڑک پر جمع ہیں جس کو پروفیسر عبدالغفور صاحب کے نام سے موسوم کیا گیا ہے وہ اسلام کے سچے خادم اور داعی تھے۔ آج سے عرصہ دراز پہلے یہاں کی مسلمان بہن کی چادر کو ہاتھ لگایا اس مسلمان بہن نے معتصم باللہ کو آواز دی اور انہوں نے لمبا سفر طے کرکے اس کی پکار پر لبیک کہا اور اس کی داد رسی کو پہنچے آج اہل فلسطینی، فلسطینی مائیں اور بہنیں پکار رہی ہیں کہ کوئی معتصم باللہ اور کوئی صلاح الدین ایوبی ہے جو آج ہماری دادرسی کو پہنچے لیکن افسوس ہے کہ آج چاروں طرف خاموشی ہے۔ آج اس خاموشی کو توڑنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج عالم اسلام کے حکمران اور قیادت بزدلی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ ہم حکمرانوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ فلسطینی مسلمانوں کی آوازپر لبیک کہیں۔ اسلامی سربراہ کانفرنس بلائیں۔ سب سے زیادہ ذمہ داری سعودی عرب کی بنتی ہے کہ وہ عالم اسلام کی قیادت کریں اور اسرائیل کے خلاف جہاد کا اعلان کریں۔ آج فلسطینی، کشمیری اور دےگر مسائل اس وجہ سے ہیں کہ حکمرانوں نے اپنا قبلہ امریکہ کو بنایا ہوا ہے حکمرانوں کو اپنا قبلہ مکہ اور مدینہ کو بنانا ہوگا۔ نواز شریف فلسطین کے مسئلے پر خاموش نہ رہیں، فوری طور پر اسلامی ممالک کا سربراہی اجلاس طلب کریں۔ اسلام آباد کے حکمران صرف اپنے اقتدار بچانے کا سوچ رہے ہیں، ان کے پاس عالم اسلام کا کوئی ایجنڈا نہیں ہے، لیکن عوام غیرت کا راستہ اختیار کریں گے۔ حکمرانوں کے پاس مہنگائی بد امنی لوڈ شیڈنگ اور بے روزگاری کے خاتمے ،ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کے چنگل سے نکلنے کا کوئی علاج نہیں ہے کیوں کہ یہ سرمایہ داروں وڈیروں جاگیرداروں اور امریکا کی غلامی کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں۔

ڈاکٹر خالدمشعل ٹیلی فونک خطاب میں کہا کہ غزہ میں فلسطینی مجاہدوں نے اسرائیلی فوجیوں کو ایسا سبق سکھا یا ہے کہ وہ یاد رکھیں گے اور مزاحمت کا مظاہرہ کرکے ثابت کردیا ہے کہ وہ ان کے سامنے سر نہیں جھکائیں گے۔ ہمیں یقین ہے کہ پاکستان کی عوام فلسطینی مسلمانوں کو ہرگز اکیلا نہیں چھوڑیں گے۔ ہمارا مقصد ہے کہ ہم قبلہ اول بیت المقدس کی آزادی کی جدوجہد جاری رکھیں گے ۔فلسطینی اپنی مزاحمت کی تحریک کو کبھی نہیں ختم کریں گے۔ ہم امید رکھتے ہیں کہ پاکستانی عوام مردو خواتین اور نوجوان اس تحریک مزاحمت میں اپنا حصہ ضرور ڈالیں گے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s