خاتون کرکٹرحلیمہ کی پراسرارخودکشی کامعمہ حل نہ ہوسکاملتان میں خاتون کرکٹرحلیمہ کی پراسرارخودکشی کامعمہ اب تک حل نہ ہوسکا،پولیس کا کہنا ہے کہ ورثا کی کیس میں عدم دلچسپی تحقیقات پر اثرانداز ہورہی ہے۔ملتان گلگشت پولیس کے ایس ایچ او راجا ندیم مجتبیٰ کے مطابق ورثا کی طرف سے قانونی کاروائی میں عدم دلچسپی کے بعد پولیس اس معاملہ کو قانونی اعتبار سے مزید دیکھ رہی ہے ،جیو نیوز سے بات کرتے ہوئے گزشتہ روز صوبائی وزیر قانون رانا مشہود احمد نے کہا تھا وہ بطور وزیر کھیل اور وزیر قانون اس خودکشی کی انکوائری شروع کرائیں گے۔ دوسری طرف کرکٹ ویمن ونگ نے حلیمہ رفیق کی خوکشی پر افسوس کا اظہار کیا گیا ہے۔ونگ کے پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ پی سی بی کی گزشتہ سال ہونے والی انکوائری میں الزامات غلط ثابت ہونے پر پانچ کھلاڑیوں پر چھ ماہ کے لئے پابندی عائد کی گئی تھی اور کسی بھی انکوائری کے سامنے ان پانچ میں سے دو خواتین صبا غفور اور حلیمہ رفیق پیش ہی نہیں ہوئی تھیں۔مبینہ طور پر حلیمہ رفیق نے شدید ذہنی دباؤ کی وجہ سے خود کشی کر لی تھی۔