اسرائیل نے غزہ میں خون کی ندیاں بہا دیں، فضائی کارروائی میں 50 سے زائد افراد شہیدغزہ پر اسرائیلی درندگی 13ویں روز بھی جاری ہے اور صیہونی فضائی بمباری کے نتیجے میں 50 سے زائد افراد شہید اور متعدد زخمی ہوگئے، اسرائیلی بربریت میں شہید فلسطینیوں کی تعداد 370 سے تجاوز کرگئی۔
غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق صیہونی جیٹ طیاروں نے غزہ کے شمالی علاقے شیجائیا میں شدید بمباری کی جس کے نتیجے میں 40 سے زائد افراد شہید ہوگئے جبکہ متعدد عمارتیں منہدم ہوگئیں، امدادی ٹیموں کی جانب سے ملبے تلے دبے افراد کو نکالنے کی کوششیں جاری ہیں جبکہ ملبے تلے مزید لاشوں کی موجودگی کا خدشہ ہے۔ اس سے قبل صیہونی جیٹ طیاروں نے ایمبولینس کو بھی نشانہ بنایا جس میں 2 معصوم بچوں سمیت 4 افراد شہید ہوگئے جبکہ ایک اور کارروائی میں غزہ کے مشرقی علاقے میں بمباری کی گئی جس کے نتیجے میں خاتون سمیت 2 کمسن بچے شہید ہوگئے جبکہ فلسطین اسلامک موومنٹ کے سینئر رہنما خلیل حیا کا بیٹا بھی حملے میں شہید ہوا۔
دوسری جانب اسرئیلی ٹینکوں نے مشرقی علاقے رفح میں شدید گولہ باری کی جس کے نتیجے میں 6 افراد شہید اور 10 زخمی ہوگئے جبکہ شہید ہونے والوں میں 3 بھائی بھی شامل ہیں۔ اسی طرح وسطی غزہ میں بمباری کے نتیجے میں 29 سالہ نوجوان بھی شہید ہوگیا۔ دوسری جانب حماس نے دعویٰ کیا ہے کہ صیہونی فوج کی زمینی کارروائی کے دوران اب تک 15 فوجی ہلاک کئے جاچکے ہیں۔
واضح رہے کہ 8 جولائی سے جاری اسرائیلی بربریت کے دوران زخمی ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 2300 سے تجاوز ہوگئی جبکہ اسرائیلی فضائی اور زمینی کارروائی کے دوران غزہ کا انفرااسٹرکچر بھی مکمل طور پر تباہ ہوکر رہ گیا ہے۔