بھارت:نئے آرمی چیف تعیناتی سے پہلے ہی متنازع ہوگئے

لیفٹیننٹ جنرل دلبیر سنگھ سہاگ نے بھارت کے نئے آرمی چیف کا عہدہ سنبھال لیانئے آرمی چیف تعیناتی سے پہلے ہی متنازع ہوگئے نئی دہلی : بھارت میں نئے آرمی چیف لیفٹیننٹ جنرل دلبیر سنگھ سہاگ تعیناتی سے پہلے ہی متنازع ہوگئے۔ بی جے پی نے فیصلے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے اسے سنگین غلطی قرار دیا ہے۔بھارت کی حکمراں جماعت کانگریس کو انتخابات میں شکست صاف دکھائی دے رہی ہے تاہم جاتے جاتے وہ بی جے پی پر ایسا وار کرگئی کہ نئی حکمراں پارٹی ٹرپتی بھی رہے گی اور کچھ کہہ بھی نہیں پائیگی، کابینہ نے گذشتہ روز سینیئر ترین جنرل دلبیر سنگھ سہاگ کو آرمی چیف تعینات کرنے کی منظوری دے دی، اب صرف صدر کے دستخط باقی ہیں۔ جنرل سہاگ یکم جون کو جنرل بکرم سنگھ کی جگہ لیں گے۔ یہ وہی جنرل دلبیر سنگھ ہی جو سابق بھارتی آرمی چیف اور اب کے بی جے پی رہنما جنرل وی کے سنگھ ریٹائرڈ کی آنکھ میں کانٹے کی طرح چبھتے تھے۔ جنرل وی کے سنگھ نے جنرل سہاگ کے پروموشن تک پابندی لگادی تھی لیکن جنرل سہاگ موجود آرمی چیف جنرل بکرم کے لاڈلے ہیں۔ جنرل بکرم سنگھ نے آرمی چیف بنتے ہی جنرل سہاگ کی پروموشن سے نہ صرف پابندی ہٹائی بلکہ اسے وائس آرمی چیف بنادیا اور اس طرح ان کی آرمی چیف بننے کی راہ ہموار ہوگئی۔ تاہم بی جے پی کو ایک کروٹ چین نہیں آ رہا۔ نئی حکمراں جماعت کا کہنا ہے کہ اس طرح جلد بازی میں تعیناتی ایک سنگین غلطی ہو گئے تاہم کمیونسٹ پارٹی ایسا نہیں سمجھتی،، ان کا کہنا ہے کہ آرمی چیف کی تعیناتی آئینی معاملہ ہے، اس میں کچھ غلط نہیں ہے۔نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کا بھی کہنا ہے کہ انہیں جنرل دلبیر سنگھ سہاگ کی تعیناتی پر کوئی اعتراض نہیں تاہم یہ تعیناتی جلد بازی نہیں ہونی چاہئے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s