پی ٹی آئی کے 20 سے زائد ایم پی ایز کا استعفیٰ کے معاملے پر تحفظات کا اظہارخیبرپختونخوا اسمبلی میں تحریک انصاف کے 20 سے زائد ارکان اور وزراء نے اسمبلی تحلیل کرنے اور قیادت کی جانب سے استعفے طلب کرنے کی اطلاعات پر تحفظات کا اظہار کردیا۔

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے صوبائی اسمبلی کی تحلیل اور استعفوں کا معاملہ چھیڑ دیا تو ان کی پارٹی کے اپنے ہی ایم پی ایز راستے کی دیوار بن گئے، خیبرپختونخوا کے 20 سے زائد ارکان اسمبلی اور وزراء نے اس تجویز پر تحفظات کا اظہار کیا ہے اور وہ جلد پارٹی سربراہ کو اپنے تحفظات سے آگاہ کریں گے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعلیٰ پرویز خٹک نے بھی اس تجویز سے عدم اتفاق کیا ہے جبکہ صوبے میں پی ٹی آئی کو اپنی ہی حلیف جماعتوں عوامی جمہوری اتحاد اور جماعت اسلامی کی مخالفت کا بھی سامنا ہے، دونوں جماعتوں نے اسمبلی کی تحلیل اور استعفوں کی تجویز مسترد کردی ہے۔
دوسری جانب اپوزیشن جماعتوں نے اسمبلی کی تحلیل روکنے کیلئے وزیراعلیٰ پرویز خٹک کیخلاف تحریک عدم اعتماد لانے پر غور شروع کردیا، ذرائع کے مطابق ن لیگ اور جے یو آئی نے متبادل حکومت کے قیام کیلئے کوششیں شروع کردی ہیں اور اس سلسلے میں ان کی جماعت اسلامی اور دیگر جماعتوں سے رابطے ہوئے ہیں۔

ادھر وزیراعلیٰ پرویز خٹک اسمبلی کی تحلیل اور استعفوں کو محض پروپیگنڈا قرار دیا، انہوں نے واضح کیا کہ پارٹی کے قائد عمران خان نے نہ تو استعفے طلب کئے اور نہ ہی وہ صوبائی اسمبلی توڑیں گے۔