بارہ مولا کی جیل میں قیدیوں کا کشمیری نوجوان پر تشددمقبوضہ کشمیر کے علاقے بارہ مولا کی جیل میں قیدیوں نے کشمیری نوجوان کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس نے واقعے کی تردید کرتے ہوئے ملزمان کے خلاف کارروائی سے انکار کردیا۔
عاشق لون کو بیس جولائی کو بدنام زمانہ کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت پتھراؤ کاجھوٹا الزام لگا کر گرفتار کیا گیا تھا۔ بارہ مولا کی جیل میں قید عاشق لون کو دیگرقیدیوں نے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جس سے اس کے سر پر شدید چوٹ آئی۔ نوجوان کو ڈسٹرکٹ اسپتال کپواڑہ منتقل کر دیا گیا ہے جہاں اس کا علاج جاری ہے۔ ادھر غاصب انتظامیہ نے شناخت کے باوجود تشدد میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی سے انکار کردیا ہے۔ بھارتی پولیس کا کہنا ہے کہ سرے سے ایسا کوئی واقعہ ہی رونما نہیں ہوا۔