تشدد پر اکسانے پر مبنی تقریر، طاہرالقادری کے خلاف مقدمہ درجپنجاب پولیس نے عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کے خلاف کارکنوں کو تشدد پر اکسانے اور قانون ہاتھ میں لینے پر مبنی اشتعال انگیز تقاریر کرنے کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے، مقدمہ لاہور کے ایک تھانے میں درج کیاگیاہے ۔ذرائع نے بتایا کہ ڈاکٹر طاہر القادری نے چند روز پہلے کارکنوں سے خطاب کے دوران اپنی تقریر میں کارکنوں کو پولیس پر حملے پر اکسانے اور قانون کو ہاتھ میں لینے کی ترغیب دی تھی ، جس کا پنجاب حکومت نے لاء ڈیپارٹمنٹ سے تجزیہ کروایا اور اس پر قانونی رائے حاصل کی اور پھر آراء کی روشنی میں لاہور کے ایک تھانے میں ان کےخلاف مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا۔ ذرائع کا کہناہےکہ مقدمے کے تحت طاہر القادری کو گرفتار بھی کیا جاسکتاہے۔ادھر ترجمان پنجاب حکومت نےطاہر القادری کے خلاف مقدمہ درج ہونے کی اطلاع سے لا علمی کاا ظہار کیا ہے۔ پولیس کے مطابق طاہرالقادری کے خلاف مقدمہ تھانا لوئرمال میں شہری خورشیدکی درخواست پردرج کیاگیا،مقدمہ انڈر سیکشن 16ایم پی او، دہشت گردی ایکٹ سمیت دیگردفعات کےتحت درج کیاگیا ہے۔