کراچی میں تحریک انصاف کے بانی کارکن اور پولیس اہلکار سمیت 4افراد قتل

news-1407428913-1815 گارڈن میں دہشت گردوں کی فائرنگ سے تحریک انصاف کے بانی کارکن و مرحوم سیاسی رہنما بوستان علی ہوتی کا چھوٹا بھائی توفیق علی ہوتی اپنے کزن سمیت جاں بحق ہوگیا، واقعہ گارڈن ٹریفک پولیس چوکی کے عین سامنے ہوا جس سے بھگدڑ مچ گئی۔ جبکہ پیر آباد کے علاقے میں مسلح ملزمان کی فائرنگ سے پولیس اہلکار جاں بحق ہوگیا، فائرنگ کے دیگر واقعات میں خواتین سمیت چار افراد زخمی ہوگئے، اسٹیل ٹاﺅن کے علاقے سے نوجوان کی تشدد زدہ لاش ملی۔ تفصیلات کے مطابق گارڈن تھانے کی حدود مین گارڈن چوک ٹریفک پولیس چوکی کے سامنے موٹر سائیکل سوار دہشت گردوں کی فائرنگ سے موٹر سائیکل سوار دو افراد شدید زخمی ہوگئے، اندھا دھند فائرنگ سے علاقے میں بھگدڑ مچ گئی اور ٹریفک پولیس کے اہلکار بھی بھاگ کھڑے ہوئے، سڑک پر کئی گاڑیاں آپس میں ٹکرا گئیں۔ دونوں زخمیوں کو فوری سول اسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستے میں چل بسے، اسپتال پہنچنے پر ڈاکٹروں نے دونوں کی موت کی تصدیق کر دی۔ بعد ازاں اسپتال میں مقتولین کی شناخت 50سالہ توفیق علی ہوتی ولد باز علی ہوتی اور محمد عارف ولد محمد صدیق کے ناموں سے ہوئی جو کہ گارڈن ویسٹ کے علاقے میں مین گارڈن چوک رحمانیہ مسجد کے قریب واقع مکی اپارٹمنٹ کے رہائشی اور آپس میں کزن ہیں۔ مقتول توفیق علی ہوتی تحریک انصاف کے سنئیر رہنما اور مسلم لیگ ( ق) کے مرحوم رہنما بوستان علی ہوتی کے چھوٹے بھائی تھے۔ تحریک انصاف کراچی کے ترجمان نے بتایا کہ مقتول توفیق علی ہوتی تحریک انصاف کے بانی کارکنوں میں سے تھے اور وہ 1996سے تحریک انصاف کے ساتھ وابستہ تھے۔ انہوں نے بتایا کہ تحریک انصاف کے قیام کے بعد سے توفیق علی ہوتی نے پارٹی کے لئے اہم کردار ادا کیا تھا جبکہ ہوتی برادری بھی تحریک انصاف کی ہی حامی ہے۔ دوا خان نے بتایا کہ مقتول تعمیراتی ٹھیکیدار اور وہ عرصہ دراز سے کنسٹریکشن کا کاروبار کررہے تھے۔وہ تین بچوں کے باپ تھے جن میں ایک بیٹی اور دو بیٹے شامل ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ توفیق علی ہوتی تحریک انصاف ضلع جنوب کے صدر رہنے کے علاوہ دیگر اضلاع کے بھی صدر رہ چکے ہیں۔ انہوں نے واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ واردات میں ملوث ملزمان کو فوری گرفتار کیا جائے۔ سول اسپتال کے سنئیر ایم ایل او ڈاکٹر نثار علی شاہ نے بتایا کہ مقتول توفیق علی ہوتی کو سینے پر دو گولیاں لگی ہیں جبکہ مقتول محمد عارف کو سر پر ایک گولی لگی جو جان لیوا ثابت ہوئی ہے۔ ایس ایس پی سٹی شیراز نزیر نے بتایا کہ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ ملزمان کی تعداد تین تھی جو کہ دو موٹرسائیکلوں پر سوار تھے اور واردات میں نائن ایم ایم پستول استعمال ہوا ہے، پولیس نے واردات کی مختلف پہلوﺅں سے تفتیش شروع کر دی ہے، پولیس نے دونوں لاشیں ضابطے کی کارروائی کے بعد ورثا کے حوالے کر دی ہے۔ واردات کے بعد متاثرہ علاقے میں کشیدگی پھیل گئی ہے۔ واضح رہے کہ گارڈن اور رام سوامی کے علاقے میں ہوتی برادری کی بڑی تعداد رہائش پزیر ہے۔ ادھر پیر آباد تھانے کی حدود اسلامیہ کالونی نمبر 1 گلی نمبر 10 میں جمشید پیٹرول پمپ کے عقب میں مسلح ملزمان نے اندھا دھند فائرنگ کردی اور فرار ہوگئے ، فائرنگ کے نتیجے میں موٹر سائیکل سوار پولیس اہلکار 35 سالہ محمد سجاد عباسی ولد محمد مسکین عباسی موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا، پولیس نے فائرنگ کی اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچ کر لاش کو تحویل میں لے کر قانونی کارروائی کیلئے عباسی شہید اسپتال پہنچایا، ایس ایچ او پیر آباد حق نواز نے بتایا کہ شہید اہلکار اسی علاقے کا رہائشی اور گبول ٹاﺅن تھانے میں تعینات تھا، وہ گھر سے موٹر سائیکل پر سادہ کپڑوں میں ڈیوٹی پر جا رہا تھا کہ گھر کے قریب ہی پہلے سے گھات لگائے ملزمان نے اسے نشانہ بنایا اور گلیوں میں پیدل ہی فرار ہوگئے ، شہید اہلکار دو بچوں کا باپ اور اسکا آبائی تعلق فیصل آباد سے تھا۔ پولیس نے ضابطے کی کارروائی کے بعد لاش ورثاءکے حوالے کردی ہے، پولیس نے مختلف پہلوﺅں پر تفتیش شروع کر دی ہے۔ قبل ازیں اسٹیل ٹاﺅن تھانے کی حدود میں نیشنل ہائی وے کو سپر ہائی وے سے ملانے والے لنک روڈ سے متصل جوکھیو دینار گوٹھ میں پیلا اسکول کے قریب سے نامعلوم نوجوان کی تشدد زدہ لاش ملی، لاش کی اطلاع ملتے ہی پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش کو تحویل میں لے کر جناح اسپتال منتقل کیا۔ ایس ایچ او اسٹیل ٹاﺅن ہارون کورائی نے بتایا کہ مقتول کی عمر 28سال کے قریب ہے اور لاش دو روز پرانی معلوم ہوتی ہے۔ پولیس کو شبہ ہے کہ مقتول کو نامعلوم ملزمان نے اغوا کے اور تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد گلا گھونٹ کر قتل کیا اور لاش مذکورہ مقام پر پھینک کر فرار ہوگئے ہیں، لاش پرانی ہونے کے باعث گل سڑھ گئی ہے جسکے باعث شناخت میں مشکلات کا سامنا ہے، لاش کو پوسٹ مارٹم کے بعد تلاش ورثا کے لئے ایدھی سرد خانے منتقل کر دیا گیا ہے۔ سرجانی ٹاﺅن کے علاقے سیکٹر 50میں فائرنگ سے 60سالہ خاتون سہیلہ بیگم زخمی ہو گئیں۔ سر سید ٹاﺅن تھانے کی حدود نارتھ کراچی سیکٹر 11-Bمیں فائرنگ کے واقعے میں خاتون شمشاد بی بی زوجہ رمضان زخمی ہو گئی ۔ کورنگی نمبر 5کے علاقے میں مسلح ملزمان نے لوٹ مار کی مزاحمت کرنے پر فائرنگ کر کے 25سالہ نیک محمد ولد تاج محمد زخمی کر دیا ۔ بلال کالونی کے علاقے نارتھ کراچی میں دو منٹ چورنگی کے قریب فائرنگ کے واقعے میں 20سالہ کامران ولد حبیب زخمی ہوگیا۔ تمام زخمیوں کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s