یوم شہداسےقبل ہی عوامی تحریک کےکارکنوں اورپولیس میں تصادم

یوم شہداسےقبل ہی عوامی تحریک کےکارکنوں اورپولیس میں تصادم لاہور میں پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں اور پولیس کے درمیان جھڑپیں شروع ہوگئیں، رات گئے فیصل چوک میدان جنگ بن گیا، آنسوگیس کی شیلنگ سے متعدد مظاہرین جب کہ پتھراؤ سے تین پولیس اہلکار زخمی گئے۔ پی اے ٹی کے رہنما اور کارکن کہتے ہیں کہ یوم شہدا میں شرکت کے لیے مختلف شہروں سے آنے والے قافلے روک لیے گئے اور تشدد شروع کر دیا گیا۔

رات گئے فیصل چوک پر آنسو گیس کی شیلنگ اور لاٹھی چارج کے مناطر دیکھنے کو آئے،جہاں پولیس کی بھاری نفری تعینات تھی، آنسو گیس سے بچنے کیلئے ماسک پہنے پی اے ٹی کے کارکنوں کی تیاری بھی عروج پر تھی، جس کے بعد رات گئے فیصل چوک میدان جنگ بن گیا۔

پرعزم کارکن نعرے بازی بھی کرتے رہے، پولیس تشدد سے نہ ڈرنے کا اعلان بھی کرتے رہے۔ پولیس نے ماڈل ٹاؤن میں پاکستان عوامی تحریک کے یوم شہدا کو ناکام بنانے کے لیے لاہور میں بھاری گاڑیوں کا داخلہ بھی بند کردیا۔ نئے کنٹینرز منگوا کر ڈاکٹرطاہر القادری کے گھر کے اطراف مزید کئی راستے بند کر دیئے اور پکڑدھکڑ بھی جاری ہے، اسی پکڑدھکڑ کے دوران جھڑپیں ہوئیں، جس سے کئی کارکن زخمی ہوئے، جب کہ تین زخمی پولیس اہلکاروں کو اسپتال پہنچایا گیا۔

ادھر القادریہ پر پی اے ٹی کے کارکن ہر قسم کی صورتحال کے لیے تیار ہیں، رہنماؤں اور کارکنوں کا کہنا ہے کہ پولیس کا کریک ڈاؤن راستے کی دیوار نہیں بن سکتا۔ یوم شہدا کو ناکام بنانے کی خواہشمند پنجاب حکومت کو منہ کی کھانی پڑے گی۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s