لاہور ہائیکورٹ کا گلو بٹ کی رہائی کا حکم لاہور ہائیکورٹ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن میں توڑ پھوڑ کے مرکزی ملزم گلو بٹ کی ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں رہا کرنے کا حکم جاری کر دیا ہے۔

عدالت نے گلو بٹ کو ایک لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا ہے، جس کے بعد انہیں رہا کر دیا جائے گا۔

ملزم گلو بٹ پرعوامی ملکیتوں کو توڑ پھوڑ کے زریعے نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔

شیر لاہور کے نام سے مشہور گلو بٹ کو اس وقت گرفتار کیا گیا تھا، جب 17 جون کو لاہور کے ماڈل ٹاؤن علاقے میں پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں اور پولیس کے درمیان ہونے والی جھڑپ کے دوران ٹی وی چینلز پر گلو بٹ کو گاڑیوں کے شیشے توڑتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

یاد رہے کہ 22 جولائی کو لاہور کی انسداد دہشتگردی کی عدالت نے گلو بٹ کی ضمانت کی درخوست مسترد کردی تھی۔

جسٹس ہارون کا کہنا تھا کہ ایسا شخص جو عوام میں خوف و ہراس کا سبب ہو، اسے کسی قیمت پر رہا نہیں کیا جانا چاہیے۔