دوسروں کو نصیحت خود میاں فصیحت

عاقب علی
دوسروں کو نصیحت خود میاں فصیحتعمران خان درست کہتے ہیں،نواز شریف نے بھائی شہباز شریف کو وزیر اعلیٰ پنجاب،حمزہ شہباز کو ایم این اے ،مریم نواز کو یوتھ لون اسکیم کا ذمہ دار اور کئی دیگر رشتہ داروں کو وزارتیں و دیگر اہم عہدے دے کر بادشاہت قائم کردی، ان شخصیات کی تشہیر کیلئے ریاستی وسائل کا بے دریغ استعمال کیا گیا۔
دراصل یہ دھاندلی جیسے غیر جمہوری عمل سے بنی بادشاہت ہے،اس کا ڈھڑن تختہ کرنے کیلئے آزادی مارچ ’’ عین جہاد‘‘ ہے،اس کیلئے استعفیٰ دے کر اسمبلیاں چھوڑ دینگے، پنجاب حکومت نے گلو بٹ کی طرز پر کئی پولیس اہلکار تخلیق کرکے سیاست میں ایسے’’ریاستی تشدد ‘‘کا آغاز کردیا، جس کی نظیر صرف آمریت کے ادوار میں ہی ملتی ہے،عوام ظلم و جبر اور کرپشن سے بھرپور نظام کے خاتمے میں ہمارا ساتھ دے۔
بہت خوب عمران خان صاحب،شکر ہے آپ نے ہمیں ٹی وی اشتہار کے ذریعے ہی سہی بتادیاکہ خیبر پختونخوا میں’’ گلو بٹ‘‘ جیسے افراد کیلئے کوئی گنجائش نہیں،کے پی کے میں تحریک انصاف کی حکومت نے کئی سو کرپٹ پولیس اہلکاروں کو گھر کا راستہ دکھا دیا ہے،پنجاب پولیس میں کرپٹ عناصر کی گنجائش تو شہباز شریف صاحب نے پیدا کی ہے، مگر کے پی کے نے آن لائن ایف آئی آر سمیت کئی اہم اقدامات کرکے امن و امان کی کئی ایک مثالیں قائم کردیں۔اب یقیناًمخالفین کے پی کے حکومت کی کارکردگی پر سوال نہیں اٹھائینگے کیوں کہ اشتہار کے آخر میں آپ نے خود کہہ دیا ہے کہ’’ صوبائی پولیس کے اہلکار عوام کے خادم ہیں‘‘۔
عمران خان صاحب آپ اور آپ کے ابلاغی مجاہدین ناراض نہ ہوں تو میں کچھ پوچھ لوں آپ سے ؟ ۔میں اتنا یقین تو آپ پر کر سکتا ہوں کہ آپ مجھے سوال کے حق سے محروم نہیں کرینگے۔آپ تحریک انصاف کے قائد ہیں،اپنی صوبائی حکومت کو یقیناًگائیڈ لائن فراہم کرتے ہونگے،جو آپ کا حق ہے،کیونکہ اِسی کارکردگی کی بنیاد پر ہی آپ نے آئندہ الیکشن میں ووٹ مانگنا ہیں۔ جب آپ اپنی جماعت کے قائد ہیں، کے پی کے وزیر اعلیٰ یا صوبائی وزیر داخلہ نہیں ہیں تو خالص صوبائی اشتہار میں آپ کیا کررہے ہیں؟۔اس جگہ تو صوبائی حکومت کے اعلیٰ ذمہ دار کو ہونا چاہیے تھا مگر وہاں بھی آپ کی بھاری بھر کم شخصیت ہمیں نظر آئی، ویسے اس اشتہار کے اخراجات کون ادا کررہا ہے؟ آپ یا آپ کی جماعت؟ لیڈر کی تشہیر کیلئے اخراجات ہونا ہی چاہیں۔ لیکن اگر صوبائی فنڈز سے یہ ادائیگی ہورہی ہے تو پھر آپ کا اس میں بطور ماڈل آنا کیا درست ہے؟۔کیونکہ یہی وسائل کے بے جا استعمال کا الزام توآپ شریف خاندان پر بھی لگا رہے ہیں اور خودبھی اس سے مستفید ہورہے ہیں،مگر آپ کی بے داغ سیاست پر یہ داغ جچتا نہیں۔
بات وہی ہے جو کسی نے کیا خوب مثال دے کر کہی ہے کہ ’’ جب تم کسی پر ایک انگلی اٹھاتے ہو تو نظر میں رہے کہ بقیہ چار انگلیاں آپ کی طرف اشارہ کررہی ہوتی ہیں‘‘۔ویسے ایک اورچار کا تناسب تو آپ سمجھ ہی گئے ہونگے۔ نوازشریف اگر اپنی جماعت اور حکومت کا بادشاہ ہے تو آپ کی جماعت میں بھی تو کوئی آپ کے آگے اٹھنے کی اجازت نہیں، آپ کی جماعت کی دوسرے درجے کی سیاسی قیادت تو منظرپر نظر آتی ہے مگر آپ کا جانشیں کون ہوگا یہ سوال تاحال جواب طلب ہے۔عمران خان صاحب میں یہ نہیں کہتا کہ نواز حکومت پاک سے پاکیزہ تر ہے،لیکن کارکردگی تو آپ کی صوبائی حکومت کی بھی بہت اعلیٰ نہیں،دو سابقہ بجٹ بھی اس لیے بہتر کہے جارہے ہیں کہ وہ آپ کے کسی وزیرنے نہیں بلکہ کسی اور جماعت کے وزیر نے بنایا تھا۔ چلیں بات جو بھی ہو مگر صوبائی حکومت کے اس اشتہار کی وضاحت تو ہونی چاہیے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s