کشمیری عوام آج بھارت کے یوم آزادی پر یوم سیاہ منارہے ہیںدنیا بھر میں کشمیری آج بھارت کا یوم آزادی یوم سیاہ کے طور پر مناکر دنیا کو یہ پیغام دے رہے ہیں کہ بھارت نے ان کے حق خودارادیت کو سلب کررکھا ہے ۔ کل جماعتی حریت کانفرنس کے بزرگ رہنما سید علی گیلانی نے آج بھارت کے یوم آزادی پر یوم سیاہ منانے کی اپیل کی تھی ۔ مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال ہے اور سڑکوں پر سناٹا ہے۔یوم آزادی پر بھارتی فورسز کے انتہائی سخت اقدامات کے نتیجے میں مقبوضہ کشمیر فوجی چھاونی میں تبدیل ہوکر رہ گیا ہے ۔آج کشمیر کے دونوں حصوں اور دنیا بھر کے دارالحکومتوں میں کشمیری عوام ریلیوں،مظاہروں اور دیگر تقریبات کا انعقاد کرکے دنیا کو پیغام دیں گے کہ وہ جموں و کشمیر پر بھارتی تسلط کو تسلیم نہیں کرتے ۔حریت کانفرنس کے رہنماوں کا کہنا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیرمیں یوم آزادی کی تقریبات کے انعقاد کا کوئی حق نہیں رکھتا کیونکہ اس نے جموں و کشمیر پر غیر قانونی طورپرقبضہ کر رکھا ہے۔ ادھر نئی دلی میں بھارت کے یوم آزادی پر پرچم کشائی کی تقریب ہوئی ۔ وزیراعظم نریندر مودی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت میں زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعا ت پر انہیں شرمندگی ہے ۔ بھارتی عوام کو ایسے معاملات پربیٹیوں سے نہیں بیٹوں سے پوچھ گچھ کرنی چاہیے۔