شیخ رشید احمد نے سول نافرمانی کی تحریک سے ہاتھ جھاڑ لیےعوامی مسلم لیگ کے سربراہ رکن قومی اسمبلی شیخ رشید احمد نے سول نافرمانی کی تحریک سے ہاتھ جھاڑ لیے ہیں۔ انھوں نے کہا ہے کہ سول نافرمانی کی تحریک کا فیصلہ عمران خان کا ہے، میں اس فیصلے میں شریک نہیں تھا، نہ مجھے معلوم تھا۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ اب یا تو ہمیں جانا ہوگا یا نواز شریف کو،انہوں نےمزیدکہا کہ عمران خان کوکان میں کہاتھاکہ ڈیڈلائن کم کریں،عمران خان کی بھی مکمل کوشش تھی کہ لوگوں کےجذبات کوقابو میں رکھ سکیں لیکن کل لوگوں کےجذبات کسی کےبس میں نہیں تھے،اتنےبڑےہجوم کوسنبھالناعمران خان کےہی بس میں تھا،لیکن اب کوئی درمیانی راستہ نہیں ہے۔ شیخ رشید نے کہا ہے کہ آزادی مارچ کامعاملہ آیندہ پیرتک حل ہوجائے گا۔عمران خان کی کوشش ہےکہ کارکن ان کے کنٹرول میں رہیں،عمران خان کی مشاورت جاری ہے،جواعلان کرینگےوہ ٹھیک کرینگے۔شیخ رشید نے کہا کہ ہمیں سیاسی طورپرنقصان پہنچ سکتاہےیانوازشریف گھرجاسکتےہیں،تاہم نوازشریف کےگھر جانےکے چانسززیادہ ہیں۔