وزیر اعظم اورشہبازشریف پرمقدمہ،عدالتی حکم تھانے میں جمعسانحہ ماڈل ٹاوٴن کا مقدمہ وزیراعظم اور وزیراعلیٰ سمیت اکیس افراد کے خلاف درج کرنے کے عدالتی احکامات اور درخواست تھانہ فیصل ٹاون میں جمع کروا دی گئی۔ایڈیشنل اینڈ سیشن جج لاہور نے تین روز قبل احکامات جاری کیے کہ سانحہ ماڈل ٹاون کے حوالے سے ادارہ منہاج القرآن کی درخواست پر اکیس افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے۔جن میں وزیر اعظم نوازشریف ،وزیر اعلٰی پنجاب شہباز شریف،حمزہ شہباز،رانا ثناء اللہ، خواجہ سعد رفیق،خواجہ محمد آصف،پرویز رشید،عابد شیر علی،اور چودھری نثار وغیرہ شامل ہیں۔ ادارہ منہاج القرآن کے وکلاء کی ٹیم جب عدالتی احکامات لیکر فیصل ٹاون تھانے پہنچی تو محرر نے درخواست وصول کی۔ادارہ منہاج القرآن کے وکلاء بضد تھے کہ فوری طور پر مقدمہ درج کرکے اسکی کاپی دی جائے۔ لیکن تھانے کے محرر کا کہناتھا کہ ایس ایچ او صاحب آکر اس معاملہ کو دیکھیں گے۔وکلاء کے فون کرنے پر ایس ایچ او نے کہا کہ درخواست میں بڑے بڑے نام ہیں وہ پہلے اعلٰی پولیس افسران سے بات کرینگے۔ جس کے بعد وکلاء تھانے سے چلے گئے۔دوسری طرف آئی پنجاب کا کہنا تھا کہ قانونی رائے لینے کے بعد مقدمہ کا اندراج کیا جائیگا۔