کالعدم تنظیموں کے 155 کارکنوں کو نظر بند کرنے کی تیاریاں صوبہ سندھ میں فرقہ وارانہ تشدد اور عید قربان کے موقع پر قربانی کی کھالوں پر ممکنہ تصادم کے پیش نظر صوبے کی 9 انتہاءپسند تنظیموں کے 155 کارکنوں کو نظر بند کرنے کی سفارشات تیار کرلی گئی ہیں۔
ذرائع کے مطابق مذکورہ افراد انسداد دہشت گردی ایکٹ 1997 کے شیڈول 4 میں شامل ہیں ۔ان کا تعلق کالعدم تنظیموں سے ہے جن تنظیموں کے افراد کو نظر بند کیا جاسکتا ہے ان میں کالعدم لشکر جھنگوی، تحریک جعفریہ پاکستان، کالعدم سپاہ محمد پاکستان، تحریک غلبہ اسلام، کالعدم جیش محمد، حرکت المجاہدین، اہلسنت والجماعت کے کارکنان شامل ہیں۔
یہ سفارشات انٹیلی جنس اداروں نے تیار کی ہیں ان میں پولیس اسپیشل برانچ، سی آئی ڈی اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار شامل ہیں ۔دہشت گردوں کی فہرست میں شامل ان 155 افراد کو صوبے کے لیے خطرناک قرار دیتے ہوئے نظر بند کرنے کی سفارش محکمہ داخلہ سندھ سے کی جائے گی جس پر ان کو ایک سے تین ماہ تک حکومت نظر بند کرسکتی ہے۔