الجزائری گلوکارہ نے فلسطینیوں کے قتل عام پراسرائیل میں گانے سے انکار کر دیا

الجزائری گلوکارہ نے فلسطینیوں کے قتل عام پراسرائیل میں گانے سے انکار کر دیا الجزائر کی معروف گلوکارہ سوعاد میسی نے غزہ پر جاری اسرائیلی بمباری کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے اسرائیل میں اپنے فن کے مظاہرے سے انکار کردیا ہے۔
مصری روزنامے میں شائع ہونے والے انٹرویو میں سوعاد میسی کا کہنا تھا کہ وہ امن کے لئے گاتی ہیں حالانکہ گانا تو غزہ اور گوانتا نامو بے کے قیدیوں کے لئے گانا چاہیئے، ایک گلوکارہ کے طور انہیں حق حاصل ہے کہ وہ ایسے ملک میں پرفام کرنے سے انکار کردیں جس کے ہاتھ ننھے بچوں اور خواتین کے خون سے ہاتھ رنگے ہوں ، ایسا ملک جو حاملہ خواتین تک کی زندگی کے چراغ گل کر دیتا ہو اور بوڑھوں کا قتل عام کرتا ہو۔ گلوکارہ کا کہنا تھا کہ ایسا ملک جس کے فوجی ہر جاندار کو گولی مارنے کے لئے بے چین ہوں وہاں گانے کا مطلب ہے کہ وہ اس کی اس دہشت گردی کی تائید کرتی ہیں۔
واضح رہے کہ گزشتہ 2 ماہ کے دوران غزہ میں اسرائیل کی اپنی ننگی بربریت سے 2ہزار 100 سے زائد بے گناہ فلسطینی جام شہادت نوش کرچکے ہیں۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s