ھارت میں اونچی ذات کے ہندوؤں نے دلت خاندان کے 2 کمسن بچوں کو زندہ جلا ڈالابھارت میں ہندو انتہاپسندوں نے صرف مسلمانوں کا عرصہ حیات تنگ نہیں کررکھا بلکہ نچلی ذات کے ہم مذہب لوگوں کا جینا بھی دو بھر کررکھا ہے ایسا ہی واقعہ ہریانہ میں پیش آیا ہے جہاں اونچی ذات کے ہندوؤں نے دلت خاندان کے گھر میں گھس کر اس کے 2 کمسن بچوں کو زندہ جلا دیا۔
بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی ریاست ہریانہ کے گاؤں فرید آباد میں راجپوت ہندوؤں نے نچلی ذات کے دلت خاندان کے گھر میں گھس کر آگ لگا دی،جس کے نتیچے میں ڈھائی سالہ اور 9 ماہ کے بچے جل کر ہلاک ہو گئے جب کہ بچوں کے ماں باپ جتندر اور ریکھا بھی زخمی ہوئے ہیں، جنہیں صفدرجنگ اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں انہیں طبی امداد جاری ہے۔
پولیس کا کہنا ہے کہ دلت خاندان کے گھر پر آگ لگانے کی وجہ جائیداد کا تنازع ہے، پولیس نے مقدمہ درج کرکے مخالف فریق کے خلاف کارروائی شروع کردی ہے جب کہ جیتندر اور اس کی بیوی کو بھی مکمل سیکیورٹی فراہم کی جائے گی۔
ہریانہ کے وزیراعلی منوہر لال اونچی ذات کے ہندوؤں کے ظلم کا شکار خاندان کے لئے 10 لاکھ روپے کی امداد کا اعلان کیا ہے۔