پاکستانی حسینائیں جو پلاسٹک سرجری کرواکرکیریئر گنوا بیٹھیں

پاکستانی حسینائیں جو پلاسٹک سرجری کرواکرکیریئر گنوا بیٹھیںچہرے کی پلاسٹک سرجری کا خبط دنیا بھر کی اداکاراؤں کے سر پر سوار ہے اوروہ اپنے جسم کے جس حصے کو جس انداز میں چاہتی ہیں بنوا لیتی ہیں۔
کچھ پاکستانی حسیناؤں نے بھی پلاسٹک سرجری کے ذریعے مصنوعی حسن پانے کی کوشش کی مگر نہ صرف پہلے سے موجود خوبصورتی بھی گنوا بیٹھیں بلکہ ان کے کیریئر کے آگے بھی فل اسٹاپ لگ گیا۔ان پاکستانی اداکاراؤں میں ایک فضہ علی ہیں جن کا چہرہ لمبوترا ہونے کی وجہ سے کیمرے کے سامنے ان کی فیس بیوٹی متاثر ہوتی تھی۔ فضہ نے سرجری کے ذریعے درست کروانے کی کوشش کی اور پہلے حال سے بھی گئیں۔دوسرے نمبر پر سارہ لورین ہیں جن کے متعلق یہ تو نہیں معلوم کہ انھوں نے اپنا بیڑہ غرق کروانے کے لیے کتنی رقم خرچ کی مگر یہ سبھی جانتے ہیں کہ سرجری کے بعد ان کی قدرتی خوبصورتی ختم ہوگئی۔ سعدیہ امام نے بھی چہرے کی پلاسٹک سرجری کروا کے اپنی شکل ہی بگاڑ لی، جس کے ساتھ ہی ان کا کیریئر بھی ختم ہوگیا۔
آمنہ حق نے بھی پلاسٹک سرجری کروائی جو ان کے لیے دلی صدمے کا باعث بنی اوران کے کیریئر میں تیزی کے آنے والا عروج آن کی آن میں غارت ہو گیا۔نادیہ حسین نے بھی سرجری کے بعد اپنے چہرے کی تمام تر خوبصورتی اور رعنائی گنوا دی اور اپنے کیریئر سے بھی ہاتھ دھو بیٹھیں۔سدرہ بتول نے بھی پلاسٹک سرجری کروائی لیکن ان کے چہرے میں آنے والے بگاڑ کو دیکھ کر لگتا ہے کہ انھوں نے یہ سرجری ہیروئن نہیں بلکہ ولن بننے کے لیے کروائی تھی۔صدف کنول نے اپنے چہرے پر بہت زیادہ تجربات کیے اور اپنی ناک، ہونٹوں، گالوں اور بھنوں کی ایک ساتھ سرجری کروا ڈالی۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s