بھارتی انتہاء پسندی کی وجہ سے پاکستان وجود میں آیا، کمل ہاسن بھی پھٹ پڑےبھارت کے معروف اداکار کمل ہاسن نے کہا ہے کہ اگر بھارت میں عدم برداشت ہوتا تو ہم آج ہندوستان اور پاکستان نہیں بلکہ ایک بڑا ملک ہوتے۔ ہمیں صرف یہ خیال رکھنا ہے کہ ایسا کبھی دوبارہ نہ ہو۔
بھارت کے معروف اداکار اور ہدایتکار کمل ہاسن نے کہا ہے کہ ایوارڈ لوٹانے سے کچھ نہیں ہو سکتا کیونکہ ہندوستان میں ہمیشہ عدم برداشت ہی رہا ہے، ورنہ پاکستان بنتا ہی نہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ کسی عدم برداشت مخالف مہم کا حصہ نہیں بنیں گے اور نہ ہی اپنا ایوارڈ واپس کرینگے۔
چنئی میں منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کمل ہاسن کا کہنا تھا کہ اگر عدم برداشت نہیں ہوتا تو ہم آج ہندوستان اور پاکستان نہیں بلکہ ایک بڑا ملک ہوتے جو چین سے بھی مقابل ہو سکتا تھا۔ کمل ہاسن نے کہا کہ ہمیں صرف یہ خیال رکھنا ہے کہ ایسا کبھی دوبارہ نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ وہ بھارت کے مختلف طبقہ فکر کے افراد کی جانب سے حکومت کو لوٹائے گئے ایوارڈز کی حمایت نہیں کرتے کیونکہ اس سے کچھ حاصل نہیں ہوگا۔