ایک ماہ کے دوران دوسرے پولیس اہلکار کی خودکشی

ایک ماہ کے دوران دوسرے پولیس اہلکار کی خودکشیلاہور میں ایک اور پولیس اہلکار نے خودکشی کر لی۔ گلبرگ فیسلی ٹیشن سنیٹر میں تعینات اے ایس آئی زبیر باجوہ نے سرکاری پستول سے خود کو گولی مار کر زندگی کا خاتمہ کر لیا۔
پولیس کے مطابق فیصل آباد کا رہائشی اے ایس آئی زبیر باجوہ گلبرگ میں ٹریفک فیسلی ٹیشن سنیٹر میں تعینات تھا۔ جمعرات کی شام اچانک اس نے سرکاری پستول سے خود کو گولی مار زندگی کا خاتمہ کر لیا۔ پولیس حکام کے مطابق زبیر زہنی دباو کا شکار تھا اور اس کا شادمان کے ایک ڈاکٹر سے علاج کرایا جا رہا تھا۔ پنجاب پولیس میں یہ پہلی خودکشی نہیں اس سے قبل گزشتہ ماہ تھانہ ڈیفنس کے اے ایس آئی عظیم نے بھی سرکاری پستول سے خودکشی کی ۔ ایک سال قبل ایس پی ہیڈ کوارٹر کی ڈانٹ پر دلبرداشتہ ہو نے والے اہلکار طارق نے بھی خود کو گولی مار کر خودکشی کر لی تھی۔ 2009 میں تھانہ جنوبی چھاؤنی کے سب انسپکٹر وارث نے ڈی آئی جی انویسٹی گیشن مشتاق سکھیرا کے رویے سے تنگ آ کر تھانے میں ہی خود کو گولی مارکر خودکشی کر لی۔ ڈی پی او ننکانہ شہزاد وحید نے ڈی پی او ہاؤس میں اپنے کمرے میں گولی مار کر خود کشی کی لیکن وجہ سامنے نہیں آئی۔ تھانہ شمالی چھاؤنی کا ایک اور اہلکار بھی اپنے افسر سے اتنا تنگ آیا کہ موت کو گلے لگا لیا۔ پولیس حکام تمام واقعات کو ذاتی مسائل گردانتے ہیں جبکہ اصل وجہ جاننے کی نہ تو حکومت نے کوشش کی ہے اور نہ ہی آئی جی پنجاب نے کی۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s