شاباش اردگان شاباش

خود کلامی۔۔۔زبیر منصوری

13728973_10209491644995845_7760048557395084486_nاس وقت ساری جنگ اعصاب کی ہے
مسجدیں تیرے لئے نکل کھڑے ہونے کے اعلان کر رہی ہیں
نوجوان جنونیوں کی طرح ٹینکوں پر چڑھ کر قابض ہو رہے ہیں
ہزاروں لوگ نکل چکے باقی تیاری باندھ رہے ہیں
تیرے وفادار فوجیوں نے کاروائیاں شروع کر دی ہیں
پولیس فوجیوں کو للکار اور گرفتار کر رہی ہے

دیکھ اس وقت اگر تو جم گیا ناں تو بات ترکی تک نہیں رکے گی
دیکھ بہادری اور بزدلی ایک سے دوسرے کو لگنے والی چیزیں ہیں
تیری کامیابی امت کے نوجوانوں کے لئے امید و حوصلے کے نئے راستے کھول دے گی
یہ جبر کے بندھنوں اور خوف کے عفریتوں کو مار بھگائے گی
دیکھ ہم سب رات کے اس پہر تیرے لئے جاگ رہے ہیں
وہ دیکھ بیٹیاں اور بہنیں انسووں سے جا نماز تر کر رہی ہیں نوجوانوں کے دل تیرے ساتھ دھڑک رہے ہیں
شاباش اعصاب کی جنگ تو ہی جیتے گا اور تو جیتا تو تو نہیں جیتے گا امت جی اٹھے گی
دیکھ انہیں برسوں سے کوئی کامیابی کی خبر سننے کو نہیں ملی ان کے کان فوجی بوٹوں کی دھمک سن سن کر پک گئے ہیں دیکھ اگر تیرے حصے کے یہ پگلے فوجی حماقت کر کے نکل ہی آئے ہیں تو اب ان کی حماقت کو ان کی آخری غلطی بنا دے۔۔۔
شاباش اٹھ تاریکی کچھ ہی دیر میں شکست کھانے کو ہے سپیدہ سحر نمودار ہونے کو ہے تو اس صبح کی نوید بن جا شاباش۔۔۔ُ

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s