%d8%a8%d8%b1%d9%84%d9%86-%d8%af%db%81%d8%b4%d8%aa%da%af%d8%b1%d8%af%db%8c%d8%8c-%da%af%d8%b1%d9%81%d8%aa%d8%a7%d8%b1-%d9%be%d8%a7%da%a9%d8%b3%d8%aa%d8%a7%d9%86%db%8c-%d8%a7%d8%b5%d9%84-%d9%85%d9%84جرمن پولیس کا کہنا ہے کہ گرفتار 23 سالہ نوید برلن ٹرک حملے کا اصل ملزم نہیں، حملے میں ملوث حملہ آور کی گرفتاری کیلئے کوششیں جاری ہیں۔
جرمن نیوز میڈیا اور مقامی اخبار کی جانب سے جاری خبر کے مطابق گرفتار پاکستانی اصل دہشت گرد نہیں، جرمن اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ گرفتار 23 سالہ پاکستانی نوید ٹرک حملے میں ملوث نہیں ہے۔
جرمن میڈیا رپورٹس کے مطابق اصل ملزم تک پہنچنے کیلئے پولیس کی کارروائی جاری ہے۔ دوسری جانب قانون نافذکرنے والے اداروں نے بھی اصل ملزم کی شناخت کے حوالے گریز کیا ہے۔
یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل 23 سالہ نوید کی گرفتاری پر اسے اصل حملہ آور ظاہر کیا گیا تھا، تاہم مقامی اخبار کی رپورٹ کے بعد مختلف حلقوں میں گرفتاری نوید کے ملوث ہونے یا نہ ہونے نے کئی سوالات کھڑے کردیئے ہیں۔
واضح رہے کہ جرمنی کے شہر برلن میں ٹرک سوار حملہ آور نے کرسمس کے دوران بازار میں حملہ کرکے 12 افراد کو کچل ڈالا تھا، جب کہ حملے میں 50 سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے۔