برطانیہ کے علاقے ڈربی شائر میں ایک خاتون اور اس کے ساتھی نے مسلمان ٹیکسی ڈرائیور کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ واقعے کی ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہو گئی۔

 پچاس سالہ شاہد اقبال کے مطابق خاتون نے نہ صرف ٹیکسی کا کرایہ دینے سے انکار کیا بلکہ زبردستی گاڑی کا سٹیرنگ پکڑتے ہوئے اس سے 80 پاؤنڈ کا مطالبہ شروع کر دیا۔ انہوں نے اس صورتحال میں جب پولیس کو بلانے کے لئے فون کرنے کی کوشش کی تو اس نے ان کے ہاتھ پر کاٹ لیا، خاتون نے انہیں تھپڑ بھی مارے۔شاہد اقبال کا کہنا تھا کہ وہ گاڑی سے نکلے تو خاتون اور اس کے ساتھی نے انہیں دھکے دیئے جبکہ قریب ہی کھڑے کچھ لوگوں نے واقعہ دیکھا اور اس کی فوٹیج بنائی تاہم انہوں نے اس کی کوئی مدد نہیں کی، بلکہ مذاق اڑایا اور گانے گاتے رہے۔