استانی سے محبت کرنیوالے 15 سالہ طالبعلم کی خودکشی

اسلام آباد میں اپنی ٹیچر کو پسند کرنیوالے ساتویں جماعت کے طالبعلم نے محبت میں ناکامی پر خودکشی کرلی، والد کے پستول سے خود کو گولی مارنے سے پہلے اسکول پرنسپل کے نام خط بھی لکھا، اپنے اقدام پر پیشگی معافی بھی مانگی۔

فلموں یا گلیمرس ڈراموں کا اثر یا نادانی، محبت میں ناکامی پر ساتویں جماعت کے طالبعلم نے خود کشی کرلی، 15 سالہ اسامہ اپنی ٹیچر کو پسند کرتا تھا، سمجھانے پر اسامہ نے زندگی کا خاتمہ کر لیا، پرنسپل کے نام خط بھی لکھ ڈالا، جس میں کہا کہ مجھے ایسا نہیں کرنا چاہئے، ہوسکے تو معاف کردینا، پستول میرے پاپا کی ہے، نہیں چاہتا وہ پکڑے جائیں۔

کھیلنے کی عمر میں 15 سال کا اسامہ اپنی ہی زندگی سے کھیل گیا، اسلام آباد کے علاقے ترنول کا رہائشی ساتویں کلاس کا طالبعلم اپنی ٹیچر کی محبت میں مبتلا تھا، پہلے پرنسپل کے نام جذباتی خط لکھا، پھر اپنے ہی والد کے پستول سے خود کو گولی مارلی، زخمی حالت میں پمز لایا گیا مگر جانبر نہ ہوسکا۔

زندگی کی کہانی ختم کرنے سے پہلے اسامہ نے پرنسپل کو خط بھی لکھا، سر جی! مجھے ایسا نہیں کرنا چاہئے تھا، اگر ہوسکے تو مجھے معاف کردینا، میری موت کے بعد اس پستول کو کہیں دور پھینک دینا، کہیں پولیس میرے پاپا کو نہ پکڑ لے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s