بھارت،سیکڑوں مسلمان لڑکیاں اغوا،ہندو بناکرشادیوں کا انکشاف

بھارت میں حکمراں انتہا پسند ہندو جماعت بی جے پی نے مسلم دشمنی کی انتہا کردی، شمالی ریاست اترپردیش میں رکن پارلیمنٹ کی سرپرستی میں سیکڑوں مسلمان لڑکیوں کو اغوا کے بعد انہیں زبردستی ہندو بنا کر ان سے شادیاں کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔

بھارتی ذرائع ابلگ میں جاری رپورٹس کے مطابق بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ یوگی ادیتہ ناتھ کی سرپرستی میں ہندو یووا واہنی نامی گروپ تین سال سے یہ گھناؤنا کام کررہا ہے۔

Indians hold placards during a protest to mourn the death of the 23-year-old gang rape victim, in Bangalore, India, Saturday, Dec. 29, 2012. Shocked Indians on Saturday were mourning the death of the woman who was gang-raped and beaten on a bus in New Delhi nearly two weeks ago in an ordeal that galvanized people to demand greater protection for women from sexual violence. (AP Photo/Aijaz Rahi)

رپورٹ کے مطابق اترپردیش کے صرف ایک ضلع میں دوہزار چودہ اور اکتوبر دوہزار سولہ  کے دوران کمسن لڑکیوں کے اغواء اورلاپتا ہونے کے تین سو نواسی واقعات ہوئے،  لیکن اس پر کارروائی تو دور کی بات ایف آئی آر تک درج نہیں کی گئی۔

P1-BL573_JUDGES_P_20130517171621

آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ درجنوں کمسن لڑکیوں کو اغواء کر کے ان کو تبدیلی مذہب پر مجبور کیا گیا اور جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

 

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ ہندو یووا واہنی گروپ مسلم لڑکیوں کو اغوا کرکے انہیں مذہب کی تبدیلی پر مجبور کرتا ہے اور پھر کسی ہندو لڑکے شادی کرادی جاتی ہے، اغوار کا مسلم لڑکیوں کو ہندو بنانے سے قبل پنچایت میں اس کا باقاعدہ اعلان کرتے ہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s