بھارت میں اسکول پرنسپل اور3 اساتذہ نے 12 سالہ طالبہ کو زیادتی کا نشانہ بناڈالا

 

بھارتی ریاست بہار کے ضلع جہان آباد میں اسکول پرنسپل اور تین اساتذہ کے ہاتھوں اجتماعی زیادتی کا نشانہ بننے والی 12 سالہ طالبہ کی حالت تشویشناک ہے۔

لڑکی اپنے والدین کی اکلوتی اولاد ہے اور جہان آباد کے ایک مقامی سیکنڈری اسکول میں پڑھ رہی ہے جب کہ وہیں پر اس کی والدہ بھی فزیکل ایجوکیشن کی ٹیچر ہیں۔ واقعے کے بعد لڑکی کی والدہ نے کہا کہ ان کی پہلی ترجیح اپنی بچی کی جان بچانا ہے اور پھر وہ انصاف کےلئے لڑیں گی۔

جس وقت اجتماعی زیادتی کا یہ واقعہ ہوا تب اس بچی کی والدہ کلاس میں دوسرے بچوں کے ساتھ مصروف تھیں۔ کلاس سے فارغ ہونے کے بعد جب انہوں نے اپنی بیٹی کو تلاش کیا تو وہ بہت دیر بعد اسکول کی چھت پر بے ہوش حالت میں ملی۔

جہان آباد پولیس کا کہنا ہے کہ شکایت اور شہادتوں کی بنیاد پر بچی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کا مقدمہ اسکول پرنسپل اور مزید تین اساتذہ کے خلاف درج کرلیا گیا ہے۔ جہان آباد اور گرد و نواح میں مناسب طبی سہولیات نہ ہونے کے باعث اب اس بچی کو پٹنہ میڈیکل کالج اینڈ ہاسپٹل منتقل کردیا گیا ہے جہاں اس کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s