بولی وڈ کا مذاق اڑانے پر انوکھی سزا

بولی وڈ ہدایت کارہ، مصنفہ، اداکارہ اور کوریوگرافر فرح خان کا کہنا ہے کہ ہر دور میں بولی وڈ فلموں کا مذاق اڑانے والے لوگ موجود رہے ہیں، جنھیں اس کی سزا ملنی چاہیئے۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق فرح خان کا کہنا تھا کہ ایسے افراد کو سینما میں بیزار کن فلمیں دکھانی چاہئیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ لوگ بولی وڈ کے ساتھ کئی نام بھی جوڑتے ہیں جیسے کوئی ہماری فلموں کو بولی وڈ مصالحہ فلمز کہتا ہے جبکہ کوئی بولی وڈ آئٹم سانگ اور اب انہیں تبدیل کرنا ناممکن ہے۔

فرح خان کے مطابق جو افراد بولی وڈ فلموں کا مذاق اڑاتے ہیں انہیں فرانسیسی یا پولینڈ سینما کی فلمیں دکھانی چاہئیں اور ان کی سزا یہ ہو کہ وہ اپنی پوری زندگی یہ بیزار فلمیں دیکھیں۔

خیال رہے کہ فرح خان نے بولی وڈ کو ‘میں ہوں ناں’، ‘اوم شانتی اوم’، اور ‘ہیپی نیو ایئر’ جیسی کامیاب فلمیں دی ہیں، جن میں کئی نامور اداکاروں نے اپنے کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

انھوں نے اپنے کیریئر میں 80 فلموں کے تقریباً 100 گانوں کو کوریوگراف کیا۔

فرح خان اس وقت ہندوستانی ڈانس شو ‘جھلک دکھلا جا 9’ میں بحیثیت جج شریک ہیں، جس کے ساتھ ساتھ وہ ‘انڈین آئڈل 9’ میں بھی جج کے فرائض سرانجام دے رہی ہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s