کراچی جرائم کی شرح پھر بڑھنے لگی، جنوری میں اکتیس افراد کا قتل

کراچی میں نئے سال کا پہلا ہی ماہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کیلئے چیلنج بن گیا۔ جنوری میں اسٹریٹ کرمنلز نے چوالیس سو سے زائد شہریوں کو موٹر سائیکلوں اور موبائل فونز سے محروم کر دیا اور اکتیس افراد مارے گئے۔

 کراچی اسٹریٹ کرائم کا گڑھ بن گیا۔ موٹر سائکل، گاڑی، موبائل فونز کچھ نا چھوڑا۔ نئے سال کے پہلے ہی ماہ چوالیس سو سے زائد شہری موٹر سائیکل اور موبائل فونز سے محروم ہو گئے۔ سی پی ایل سی کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق جنوری میں 1848 موٹر سائکلیں چور اور لٹیروں کی نذر ہو گئے۔ چھبیس سو سے زائد شہریوں کو موبائل فون سے محروم کر دیا گیا۔ ایک سو سے زائد گاڑیاں بھی مسلح افراد نے چھین لیں۔ شہری کہتے ہیں حکومت صرف دعوے کر رہی ہے اور اجلاس بلاتی ہے۔ جنوری دو ہزار سترہ میں بینک ڈکیتی اور اغوا برائے تاوان کی ایک ایک واردات سامنے آئی جبکہ 7 افراد بھتہ خوروں کی بھینٹ چڑھ گئے۔ شہر کی سڑکوں پر 31 افراد کا خون بہا دیا گیا۔ شہر میں امن کی بحالی کیلٗئے پولیس رینجرز کی تابڑ توڑ کارروائیوں کے باوجود جرائم کی بڑھتی ہوئی وارداتیں حکومتی اداروں کیلئے سوالیہ نشان ہیں۔

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s