یورپی شہریوں کی اکثریت مسلمانوں کی اپنے ملکوں میں داخلے کی مخالف

ایک سروے کے مطابق یورپی ممالک کی اکثریت نے اپنے ملکوں میں مسلمانوں کی آمد کی مخالفت کر دی ہے۔

امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق چاتھم ہاؤس سروے نے یورپ کے 10 ممالک میں مسلمانوں کی آمد سے متعلق 10 ہزار195 افراد کی رائے لی اور سروے میں ہر ملک سے ایک ہزار سے زائد افراد سے سوالات پوچھے گئے۔ سروے کے مطابق 55 فیصد افراد نے مسلمانوں کی اپنے ملک میں امیگریشن روکنے کی حامی بھری جبکہ 20 فیصد یورپی سمجھتے ہیں کہ مسلمانوں کی امیگریشن جاری رہنی چاہیئے اور 25 فیصد یورپی شہری اس معاملے میں اپنی کوئی رائے نہیں رکھتے۔

سروے کے مطابق جرمنی کے 53 اور اٹلی کے 51 فیصد شہری مسلمانوں کی اپنے ملکوں میں آمد کے مخالف ہیں جبکہ بیلجیم اور ہنگری کے 64 فیصد، فرانس کے 61 فیصد اور یونان کے 58 فیصد شہری مسلم امیگریشن کے مخالف ہیں۔ اس کے علاوہ آسٹریا کے65 فیصد، پولینڈ کے 71 فیصد اور ہنگری کے 32 فیصد شہری مسلمانوں کی اپنے ملک میں آمد روکنے کے حامی ہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s